جمعرات، 29 مارچ، 2012

GIMP best image and text editing software


ایک بہترین امیج ایڈیٹنگ سوفٹویئر GIMP

کمپیوٹر پر روز مرّہ کاموں میں ہمارا سابقہ مختلف قسم کی تصاویر سے پڑتا رہتا ہے ۔ انٹر نیٹ کی دنیا میں کروڑوں ، اربوں تصاویر موجود ہوتی ہے لیکن ان میں سے اپنی مرضی کے مطابق تصاویر ایڈٹ اور ڈیزائین کرنے کے لئے ہمیں امیج ایڈیٹنگ سوفٹویئر س کی ضرورت ہوتی ہے ۔
امیج ایڈیٹنگ اور  ٹیکسٹ ڈیزائننگ کے لئے فوٹو شاپ اور کورل ڈرا دو ایسے نام ہے جن کے بعد آپ کو کسی اور سوفٹ ویئر کی ضرورت باقی نہیں رہتی۔ لیکن مسئلہ یوں ہیکہ یہ دونوں سوفٹویئر انتہائی مہنگے ہونے کے ساتھ ساتھ حجم کے اعتبار سے کافی بڑے اور ڈیزاننگ کے شروعاتی دور سے گزرنے والے لوگوں کے لئے قدر مشکل ہیں۔
فوٹو شاپ اور کورل ڈرا کے ساتھ ایک اور مسئلہ اردو ٹیکسٹ کا ہے اس کے لئے آپ کے پاس مشرق وسطٰی والا ورژن چاہئے۔ اور مڈل ایسٹ ورژن ہونے کے با وجود بہت سارے اردو فونٹ  کے استعمال میں پریشانیوں کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔
 انٹر نیٹ پر تلاش کرتے ہوئے ہمیں جیمپ نامی  ایک انتہائی بہترین سوفٹ ویئر ملا جو فوٹو شاپ کی طرز پر ہی کام کرتا ہے لیکن حجم کے اعتبار سےفوٹو شاپ سے بہت ہی  کم ہے۔  اور  ٹیکسٹ ایڈیتنگ کا بھی کوئی مسئلہ نہیں ہوتا آپ چاہے جس زبان میں ٹیکسٹ ایڈت کرنا چاہے کر سکتے ہیں ۔
جیمپ کی ایک خصوصیت یہ بھی ہے کہ آپ اپنی ڈیزائننگس کو متعدّد فارمیٹس میں محفوظ  کر سکتے ہوں۔

3 تبصرے:

  1. حضرت ۔ ۔ ۔

    آپ کی بات پر بھروسہ کر کے ڈاؤنلوڈ کر رہا ہوں ۔ ۔ ۔

    اچھا ۔ ۔ یہ جو آپ کے بلاگ پر " مشہور تحاریر " کا سلائیڈ بار ہے ۔ ۔ ۔ وہ کس طرح لگا سکتے ہیں ۔ ۔

    کبھی فرصت ملے تو بتا دیجیئے گا۔۔

    جزاک اللہ

    جواب دیںحذف کریں
  2. بھائی میں نے تو اسے مفید پایا ہے اور مجھے اردو کے ساتھ ساتھ ہندی متن کو ایڈت کرنے میں بھی یہ کافی مددگار ثابت ہوا ہے۔

    مشہور تحاریر وجیٹ کو متحرک کرنا بھی آسان ہے ایک ایچ ٹی ایم ایل کوڈ آپ کو شامل کرنا ہے جو یہاں مل جائیگا۔
    http://lordhtml.blogspot.in/2012/06/scrolling-popular-post-gadget-for.html

    جواب دیںحذف کریں
  3. بہت بہت شکریہ ڈاکٹر صاحب ۔۔۔

    الحمد للہ اس میں کامیابی مل گئی ہے ۔ ۔ ۔

    جواب دیںحذف کریں

غیر اخلاقی و مضمون سے مناسبت نہ رکھنےوالے تبصرے حذف کر دیے جاتے ہیں۔ اسی طرح ذاتیات پر تنقید و نظریاتی اختلافات کی بناء پر انتہا پسندی والے تبصرے بھی شامل نہیں کئے جائیں گے۔